Monday, 23 May 2016

Treating Cancer with wheat grass!!

اردو ترجمہ ؛ نسیم خان بشکریہ ڈان نیوز انیتا یوسف علی

گندم کی گھاس ( خید )کے کرشمے

1998   ؁ میں کرا چی کی ایک خاتون گردن کے کینسر کے آخری اسٹیج پر تھی ۔ کینسر جسم کے دوسرے حصوں تک پھیل چکا تھا ۔ اور ڈاکٹروں کے مطابق اب مریضہ کے بچنے کا کوئی امکان نہیں تھا۔ مریضہ اور اس کے گھر والوں نے ہمت نہ ہاری اور کیمو تھراپی شروع کی۔ تمام مراحل طے کرنے کے باوجود مریضہ کی حالت میں کسی طرح کی بہتری کے آ ثا ر دکھا ئی نہ دےئے۔
چند ماہ بعد ان کی ایک رشتہ دار خاتون نے جو انڈیا میں تھی ۔ انہیں روشنی کی ایک کرن دکھا ئی ۔ اور یہ کرن گندم کی گھا س سے علاج کرنے کی تھی ۔ خاتون یہ علاج شروع کرنے میں بہت پر جوش تھی۔ اور جلد از جلد شروع کرنا چا ہتی تھی ۔ علاج کے ایک مہینے کے اندر ہی بہتر ی کے آ ثا ر دکھا ئی دےئے۔ ہیمو گلو بن اور سفید جسیموں کی تعداد میں اضا فہ دیکھنے میں آیا ۔ اسکی مجموعی صحت میں نمایاں فرق محسوس ہوا ۔ اور یہ خاتون حیرت انگیز طور پر مزید پانچ سال زندہ رہی ۔
کینسر پاکستان کے ہر گھر کا مسئلہ ہے ۔ لیکن بہت کم لوگ متبادل علاج سے واقف ہونگے۔ مثلا گندم کے گھا س سے علاج۔ جڑی بوٹیوں سے علاج کو حتمی علاج کا دعوی تو نہیں کیا جا سکتا ۔ لیکن دنیا کے کئی ممالک میں اس علاج سے خاطر خواہ فائدہ ہوا ہے۔ اس سے جسم پر کسی قسم کے مضر اثرات مرتب ہونے کے اثار نہیں ملے۔ بلکہ بہتری کے اثا ر نمایاں ہیں۔ یہ پیشکش عمومی علاج جو کہ ہسپتال میں ہوتا ہے ۔ کے متباد ل تو نہیں ہو سکتی۔ مندرجہ ذیل بنیادی اجزاء اور گھا س کی تیاری کے مراحل خصوصا دلچسپی کا با عث ہو نگے۔
گندم کی گھا س سے علاج 1940 ؁ میں ڈاکٹر این وگمور نے دریافت کی تھی ۔ یہ خاتون قدرتی طریقہ علاج میں گہری دلچسپی رکھتی تھی ۔ اور اس نے اپنے کئی مریضوں کا علاج اس خصوصی طریقہ سے کیا۔ گندم کی گھاس جسم کے لیے لازم بنیادی اجزاء کے ذخیرے سے بدرجہ اتم لبریز ہے۔ مثلا نشاستہ ، لحمیات ، نمکیات ،کیلشیم ، پوٹاشیم ، فولاد ، اور 19 مختلف قسم کے امائنو ایسڈ ز کے علاوہ تمام قسم کے وٹامنز مثلا اے ، بی ، سی ، ای اور کے وغیرہ وافر مقدار میں موجود ہیں۔ مزید اس میں لٹرایل B -17 موجود ہے۔ جو کہ ضد کینسر کے طور پر تسلیم کیا جاتا ہے۔ ان تما م قدرتی اجزاء کے علاوہ اس میں کلوروفل موجود ہے ۔ کلورو فل کی کیمائی خاصیت بالکل خون میں موجود ہیمو گلو بن کی طر ح ہے۔ ڈاکٹر ارپ تھامس کے مطا بق تمام خورد بوٹیوں میں گندم کی گھا س سب سے بہتر ہے۔ کیونکہ اس میں تمام قدرتی غذا ئی اجزا موجود ہیں۔
گندم کی گھا س اگانے کا طریقہ نہایت ہی آسان ہے۔ ایک مربع فٹ کے تقریبا سات عدد مٹی کے برتن لیں۔ جن کی گہر ائی تقریبا تین انچ ہو۔ یہ پاٹ 75 فی صد مٹی اور 25 فی صد قدرتی کھا د ملا کر بھر دیں۔ چکنی مٹی یا مصنوعی کھاد وں والی مٹی سے گریز کریں ۔ 100گرام اچھے بیج لیں۔ اور 12 گھنٹوں تک پانی میں بھگو دیں۔ 12 گھنٹوں کے بعد پانی سے نکالنے کے بعد کسی موٹے گیلے کپڑے میں لپیٹ دیں ۔ اور مزید 12 تا 14 گھنٹے ہوا بند رکھیں۔ یہ عرصہ گذرنے کے بعد بیجوں کو برتن کے اندر مٹی پر پھیلا دیں۔ تمام بیج ایک دوسرے کے نہایت قریب قریب ہوں۔ بلکہ ملے ہوئے ہوں۔ اب ایک پتلی سی تہہ مٹی کی مزید بچھا دیں۔ اور بیجوں کو ڈھک دیں۔ اور 24 گھنٹو ں میں پانی کاچھڑکا ؤ فوارے کے ذریعے کرتے ہیں۔ گرمیوں کے موسم میں روزانہ دو سے تیں مرتبہ چھڑکاؤ کریں۔ آ ٹھویں دن آپ دیکھیں گے ۔ پہلے برتن میں 4 ، 5 انچ کے قریب گندم اگ گئی ہو گی۔ یہ گھاس قیچی سے کاٹ لیں۔ زمیں کے بالکل قریب سے ، لیکن جڑ سے نہ نکالیں۔ گھاس نکالنے کے برتن کو دھوپ میں خشک ہونے دیں۔ چار دن کے بعد برتن والی متی دوبارہ قابل استعمال ہو گی۔ اگر مزید ضرورت ہو تو کچھ مٹی کا اضا فہ کر لیں۔ تین چار گھنٹوں سے ذیادہ گھاس کو دھوپ میں نہ رکھیں۔ کیڑوں ، پرندوں اور کترنے والے جانوروں سے محفوظ رکھیں۔ 

گھاس کاٹنے کے بعد اس کا جوس ہاتھوں سے یا الیکٹرک جوسر استعما ل کرکے نکال لیں۔ 100گرام گھاس سے 100 ملی لٹر جوس نکالا جا سکتا ہے۔ جو کہ ایک مریض کی روزانہ کی خوراک ہے ۔ یہ انتہا ئی اہم ہے ۔ کہ جوس نکالنے کے بعد فورا استعمال کر لیا جائے۔ کیونکہ چند منٹ کے بعد اس کے طبعی خواْص ضائع ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔ 
گندم کی گھا س سے علاج نہ صرف مندرجہ بالا بیماری کے لئے ہے ، بلکہ اس کے علاوہ کئی بیماریوں میں فائدہ مند ہے ۔ ڈاکٹر این وگمور نے تقریبا 350 بیما ریوں کا علاج گندم کی گھا س سے کیا ہے۔ گندم کی گھا س سے جسم پر تین خصوصی اثرات مرتب ہوتے ہیں ۔ خون کی صفا ئی ، جگر کے زہریلے اثرات کا خاتمہ اور بڑی آ نت کا حصہ قولون کی صفا ئی۔ گندم کی گھا س مندرجہ ذیل بیماریوں کے لیئے نہائت مفید ثابت ہو ئی ہے ۔ دمہ ، بلند فشار خون ، عام نزلہ زکام ، خون کی کمی ، قبض ، معدے کی جلن، السر ، جوڑوں کے درد ، جھا ئیا ں اور گردوں میں پتھری وغیرہ ۔ یہ جسم کی قوت مدافعت بڑھانے کے لیئے بہترین ثابت ہوا ہے۔ 
کینسر کے مریضوں میں اسکے مفید اثرات یوں مرتب ہوتے ہیں۔ سب سے پہلے یہ کینسر کے خلیوں کو کم کرتا ہے۔ انہیں اکسیجن مہیا کر کے ، جو کہ کلوروفل میں وافر مقدار میں موجود ہوتی ہے۔ دوسرے نمبر پر لٹرائل B-17 اینٹی کینسر ایجنٹ ہے۔ جو کہ کینسر کو ختم کرنے کا سبب بنتا ہے۔ اور آخر میں یہ قوت مدافعت کو بڑھاتا ہے ۔ جو کہ حملہ آور جرثوموں کے لیئے مدافعتی نظام ہے۔ 
گندم کی گھا س خطرناک بیماریوں خصوصا کینسر کے لیئے انسا ن دوست ہے۔ لا تعداد محققوں نے ثابت کیا ہے۔ کہ گندم کی گھا س بیماریوں کے خلاف ایک انمول نعمت خداوندی ہے۔

Monday, 16 May 2016

Best Time to give MRCPCH


MRCPCH:


           thinking to give MRCPCH 1??

           then read this first:
           part one MRCPCH is taken thrice a year i.e feb, june,and oct. its an online exam from 2015 i.e computer based.
you must have RCPCH acount to book your exam.
test centres detail is availible at RCPCH site.
if you serously intrested in this exam then first go through the books recommended for part one preparation which i mentioned in old post. once you finish single reading book exam then with minimum 3 months left for you to finalise your prep. after that subscribe for online q bank of pass test.
there are other q banks too but i personaly recommend pass test becoz large of you gonna see in exam are from the q bank of pass test.
work hard practice more and more this is not a difficult exam to pass
all you have to do is study consistantly.
best of luck.

hepatic hemangioma

hepatic hemangioma case report!

      we recieved 10 days old female baby with complain of decrease activity and poor feeding. on invetigation first thing we found abnormal was the cloting studies. the inintial INR was 8.1.MRI abdomen done showed 2.5*2.1 size hepatic hemangioma in rt upper lobe of liver. surgical opinion taken foolow up advised but baby died at age of20 days.

Monday, 9 March 2015

Youtube in pakistan

Play YouTube in Pakistan without slowing your internet speed and proxy site's.here is the guide:
1-go to google search bar
2-type Zenmate
3-click on first link that is zenmate for chrome
4-add it to your chrome browser
5-create account
And now you are here enjoy uninterrupted fun.